Category: Dr Amir Suhail

خوشبو کی دیوار کے پیچھے

 ایڈیٹر  جنوری 27, 2024  0 Comments on خوشبو کی دیوار کے پیچھے

00 خوشبو کی دیوار کے پیچھے محمد حمید شاہد محمد حمید شاہد اردو زبان و ادب کی ایک توانا اور منفرد آواز ہے۔ان کی ادبی مصروفیات کا دائرہ کئی جہات پر پھیلا ہوا ہے اور ہر جہت لائقِ توجہ ہے۔خوشی کی بات یہ ہے کہ محمد حمید شاہد نے فکشن کی تنقید پر جس طرح تواتر کے ساتھ لکھا اس کی وجہ سے فکشن فہمی میں قابلِ قدر اضافے ہوئے ہیں۔شاعری کی تنقید پر بھی گہری نظر رکھتے ہیں۔گزشتہ دنوں جب حضرو میں ان سے ملاقات ہوئی تو مجھے اپنی خود نوشت”خوشبو کی دیوار کے پیچھے” عنایت فرمائی۔اس کتاب میں…

مکمل تفصیل خوشبو کی دیوار کے پیچھے

"کفِ خاک” کی طلسماتی فضا اور شعری جمالیات

 ایڈیٹر  جنوری 19, 2024  0 Comments on "کفِ خاک” کی طلسماتی فضا اور شعری جمالیات

00 "کفِ خاک” کی طلسماتی فضا اور شعری جمالیات سب سے پہلے تو ڈاکٹر خاور چودھری کو اپنے نظمیہ انتخاب کے لیے اتنا خوب صورت نام رکھنے پر داد دینا چاہوں گا اس نام میں بہت کچھ ہے اور اس ترکیب کو کئی فارسی شعرا نے بھی باندھا ہے لیکن شیخ علی حزیں نے اس ترکیب کو نیا آہنگ دیا ہے: بر دیدہ کشم سرمہ ز خاکِ کفِ پائے شاید کہ دہد اشک مرا رنگِ حنائے (خاکِ کفِ پا کو سرمے کی طرح آنکھوں میں سجاتا ہوں،شاید کہ وہ میرے اشکوں کو حنائی رنگ دے دے) یہ نام جہاں تخلیق…

مکمل تفصیل "کفِ خاک” کی طلسماتی فضا اور شعری جمالیات

اردو ناول کا نوآبادیاتی مطالعہ

 ایڈیٹر  جنوری 13, 2024  0 Comments on اردو ناول کا نوآبادیاتی مطالعہ

00 اردو ناول کا نوآبادیاتی مطالعہ فکشن ہاؤس لاہور ڈاکٹر ریاض ہمدانی ڈاکٹر ریاض ہمدانی سے میراپہلا اور باضابطہ ادبی تعارف ان کی کتاب "اردو ناول کا نوآبادیاتی مطالعہ”کے توسط سے ہوا۔یہ کتاب کچھ عرصہ قبل میری فرمائش پر ارسلان نے لاہور سے بھیجی تھی۔۔۔اس کی اشاعت فکشن ہاوس نے اپنے روایتی اہتمام کے ساتھ کی ہے۔۔کئی اور علمی ادبی کتابوں کےبرعکس اس کا دیباچہ بہت شان دار ہے جو ڈاکٹر ہمدانی نے خود تحریر کیا ہے۔۔اس دیباچے میں نوآبادیات کے تاریخی پہلووں کو اس انداز سے دیکھا دکھایا گیاہے کہ ناول کی روایت پر نوآبادیاتی اثرات بھی واضح ہو…

مکمل تفصیل اردو ناول کا نوآبادیاتی مطالعہ

سرسید اور ہمارے نوآبادیاتی نقاد وغیرہ۔۔۔

 ایڈیٹر  جنوری 13, 2024  0 Comments on سرسید اور ہمارے نوآبادیاتی نقاد وغیرہ۔۔۔

00 سرسید اور ہمارے نوآبادیاتی نقاد وغیرہ۔۔۔ مجھے سرسید کی فکریات سےہمیشہ دل چسپی رہی ہے،برصغیر میں نوآبادیات کے حوالے سے جب بھی کوئی بحث اُٹھتی ہے اس میں سرسید کا حوالہ ہمیشہ شامل رہتا ہے۔یہ الگ بات کہ ہمارے کچھ نوآبادیاتی نقاد اپنی کج فکری،مطالعے کی کمی یا زیادتی اور مغرب زدگی کے باعث سرسید کو درست انداز سے پیش نہیں کر سکے۔اس کی ایک بڑی وجہ یہ بھی دیکھنے میں آئی کہ نوآبادیاتی نقاد بالعموم چند بے جوڑ چیزوں کا مطالعہ کرکے اپنے نتائج اخذ کرتے ہیں۔ دراصل ان کو ایڈورڈ سعید،ہومی کے بھابا اور فرانز فینن وغیرہم…

مکمل تفصیل سرسید اور ہمارے نوآبادیاتی نقاد وغیرہ۔۔۔

سرسید احمد خان اور علامہ اقبال

 ایڈیٹر  جنوری 13, 2024  0 Comments on سرسید احمد خان اور علامہ اقبال

00 سرسید احمد خان اور علامہ اقبال اقبال اور سرسید دونوں نے علم الکلام کو اپنی اپنی ضرورت اور سہولت کے مطابق استعمال کیا ہے۔اہم بات یہ ہے کہ اقبال کی اسلامی فکر ان کی مجموعی فکر پر غالب ہے جب کہ سرسید از اول تا آخر ایک سوشل ریفارمر ہیں۔سرسید کے متنازع فیہ مذہبی بیانیوں کو اگر ایک لمحے کے لیے بھول بھی جائیں تو ان کی اصل سماجی فکر متاثر نہیں ہوتی۔اسی لیے سرسید کی سماجی فکر سے تعرض کرنے والے ان کی مذہبی فکر سے صرف نظر کرتے ہیں اور یہی مناسب علمی رویہ بھی ہے۔ اور…

مکمل تفصیل سرسید احمد خان اور علامہ اقبال

سر سید اور اقبال

 ایڈیٹر  جنوری 13, 2024  0 Comments on سر سید اور اقبال

+10 سر سید اور اقبال تحریر:حافظ صفوان محمد چوہان اقبال کے یومِ پیدائش پر آج ایک پڑھے لکھے دوست کی تقریر سنی۔ پہلا امپریشن یہی بنا کہ سر سید اور اقبال دونوں کچھ نہیں کھاتے تھے سوائے ہندوستانی مسلمانوں کا غم کھانے کے، اور کچھ نہیں پیتے تھے سوائے انگریز کی چیرہ دستیوں پر غصے کے گھونٹ پینے کے۔ سوچا کہ مجھے موقع ملتا تو میں کیا بولتا۔ یہ نکات فی البدیہہ لکھ رہا ہوں۔ ۱: سر سید اور اقبال دونوں انگریز کے فعال عہد میں پیدا ہوئے، جیے اور مرے۔ سر سید آزاد ہندوستان میں پیدا ہوئے اور زندگی…

مکمل تفصیل سر سید اور اقبال

اقبال اور نیا نوآبادیاتی نظام

 ایڈیٹر  جنوری 13, 2024  0 Comments on اقبال اور نیا نوآبادیاتی نظام

+10 "اقبال اور نیا نوآبادیاتی نظام” از ڈاکٹر محمد آصف فکشن ہاؤس لاہور ڈاکٹر محمد آصف بہاالدین زکریہ یونیورسٹی ملتان کے شعبہء اُردوسے وابستہ ہیں۔جامعات میں ایسے محنتی اور سچے محقق و نقاد کا ہونا جہاں پڑھنے والوں کے لیے فائدہ مند ہے وہاں شعبے اور یونیورسٹی کی قدروقیمت میں اضافے کا باعث بھی ہے۔ڈاکٹر محمد آصف سے میری باضابطہ ملاقات صرف ان کی کتابوں کے توسط سے ہوتی آئی ہے جب بالمشافہ ملیں گے تو سیلفی بھی بنائیں گے۔ "اقبال اور نیا نو آبادیاتی نطام” مجھےان کے دست خط کے ساتھ 19 جون 2019 کے آس پاس موصول ہوئی…

مکمل تفصیل اقبال اور نیا نوآبادیاتی نظام

ڈاکٹر احمد سہیل:معاصر تنقیدی تصورات کا رمز شناس

 ایڈیٹر  جنوری 4, 2024  0 Comments on ڈاکٹر احمد سہیل:معاصر تنقیدی تصورات کا رمز شناس

00 معاصر تنقیدی تصورات کا رمز شناس ڈاکٹر احمد سہیل کا شمار اُردو تنقید کے ان نابغہ روز گار ناقدین میں ہوتا ہے جو گزشتہ کئی دہائیوں سے اردو تنقید کے جدید اور مابعد جدید نظریات و تصورات پر باقاعدگی سے لکھ رہے ہیں۔جب سوشل میڈیا کا زمانہ نہیں تھا تو اس وقت بھی وہ پاک و ہند کے اہم ادبی رسائل و جرائد میں متواتر لکھ رہے تھے اور اس بات میں کوئی مبالغہ نہیں کہ ان کی ہر تحریر بہت منفرد،پُرمغز اور عالمی ادبی تناظر کی حامل ہوتی ہے،آپ ہمیشہ نئے نئے موضوعات سے اردو تنقید کو ثروت…

مکمل تفصیل ڈاکٹر احمد سہیل:معاصر تنقیدی تصورات کا رمز شناس

معاصر اردو افسانہ(تفہیم و تجزیہ)

 ایڈیٹر  جنوری 4, 2024  0 Comments on معاصر اردو افسانہ(تفہیم و تجزیہ)

00 معاصر اردو افسانہ(تفہیم و تجزیہ) از: ڈاکٹر ریاض توحیدی ایجوکیشنل پبلشنگ ہاؤس،دہلی اشاعت: 2018 ڈاکٹر ریاض توحیدی کشمیر کی متحرک ادبی شخصیت کا نام ہے آپ نہ صرف پاک وہند کے ایک سنجیدہ اقبال شانس ہیں بلکہ اردو افسانہ نگاری پر کئی قابل قدر کام کر رکھے ہیں جن میں زیر نظر کتاب محض ایک حوالہ ہے۔اس کتاب کی نمایاں خوبی یہ ہے کہ معاصر افسانہ نگاروں کی تخلیقات کو موضوع بنایا گیا ہے۔کتاب کا ابتدائی حصہ فن افسانہ نگاری پر بڑے اچھے مطالعات پیش کرتا ہے جس میں افسانے کی تکنیک،فنی رموز،تخلیقی مضمرات، مائیکروفکشن،فکشنی شعریات اور ادبی تھیوری…

مکمل تفصیل معاصر اردو افسانہ(تفہیم و تجزیہ)

شیخ الا کبر محی الدین ابنِ عربی

 ایڈیٹر  دسمبر 30, 2023  0 Comments on شیخ الا کبر محی الدین ابنِ عربی

+10 شیخ الا کبر محی الدین ابنِ عربی ایک تعارفی مطالعہ ڈاکٹر عامر سہیل (ایبٹ آباد ) ابنِ عربی کا پورا نام ابوبکر محمدبن العربی الحاتمی الطائی ہے۔اکثر مآخذ میں اُن کی کنیت ابوبکر اور کچھ تذکرہ نگاروں نے عبداﷲدرج کی ہے۔ عین ممکن ہے کہ وہ اپنے عہد میں اِن دونوں حوالوں سے معروف ہوں۔آ پ مشرق میں ابنِ افلاطون اور ابنِ سُراقہ کی کنیت سے بھی جانے جاتے ہیں۔ابنِ عربی اپنے عقیدت مندوں اور مقلدوں میں ’’ شیخِ اکبر ‘‘ کے خطاب سے خاص شہرت رکھتے ہیں، لقب ’ ’ محی الدین ‘‘ ہے۔ آ پ ۱۷ /…

مکمل تفصیل شیخ الا کبر محی الدین ابنِ عربی