تم تک نہیں پہنچی خبر؟ میں ہو چکا مسند نشیں

اے آسماں نیچے اُتر, اُٹھ کر کھڑی ہو اے زمیں


چوپال انٹر نیشنل, اردو والے اور زاویہ کے زیرِ اہتمام رجحان ساز اور صاحبِ اسلوب شاعر جناب محمد اظہارالحق کے شعری مجموعے ” اے آسماں نیچے اتر ” کی اکادمی ادبیات میں بہت بھرپور, شاندار اور باوقار تقریب ِ پزیرائی۔ جڑواں شہروں کے ممتاز اہلِ قلم کے علاوہ پشاور, ٹیکسلا, واہ کینٹ, حسن ابدال, مری اور فتح جنگ سے بھی احباب کی شرکت۔ میڈیااور دیگرشعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے اہلِ ذوق دوستوں کی بڑی تعداد بھی شریکِ محفل تھی۔ صدارت افتخارِ اردو جناب افتخار عارف نے فرمائی جب کہ جناب حلیم قریشی اور ڈاکٹر نجیبہ عارف مہمانانِ خصوصی تھے۔ ڈاکٹر وحید احمد, جناب شیراز منظور حیدر, ڈاکٹر ارشد محمود ناشاد اور ڈاکٹر ناہید قمر نے اظہارِ خیال فرمایا۔ ڈاکٹر ارشد محمود ناشاد صاحب کی بہت مترنم آواز کی مالک صاحبزادی عزیزہ آمنہ ارشد نے اظہار صاحب کی غزل سنا کر بہت داد سمیٹی۔ اظہارالحق صاحب کی نواسی زینب خان اور پوتے حمزہ کے ساتھ ہماری محترم بھابھی مسز اظہار الحق نے بھی مختصراً اظہار صاحب سے اپنی محبت کا اظہار کیا اور ان کے اعزاز میں ہونے والی اس یادگار تقریب کے لیے میزبانوں اور اتنی بڑی تعداد میں شریک احباب کا خصوصی شکریہ ادا کیا۔ تقریب کے اختتام پر چوپال انٹرنیشنل کے روحِ رواں اور سرپرستِ اعلٰی اور تقریب کے میزبان جناب اعجاز خان ساحر نے مہمانوں کے اعزاز میں نہایت شاندار اور بہت پرتکلف عشائیے کا بھی اہتمام کیا۔ دارالخلافہ میں ہونے والی اور جاتے ہوئے دسمبر کی یہ یادگار تقریب دوستوں کو بہت دیر تک یاد رہے گے۔ چند تصاویر دوستوں کی نذر


1 thought on “اے آسماں نیچے اتر

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے