مجلس فروغ اردو ادب دوحہ قطر کا ستائیسواں عالمی مشاعرہ

مجلس فروغ اردو ادب دوحہ قطر کا ستائیسواں عالمی مشاعرہ

اور ستائیسواں عالمی فروغ اردو ادب ایوارڈ ۲۰۲۳۔


فردوس گوش ہوگئی آواز اہل دل
زینت ہماری بزم کی اردو زباں سے ہے


(دوحہ قطر) جمعرات دو نومبر ۲۰۲۳ کی رات دوحہ قطر کی خوبصورت ترین ادبی راتوں میں سے ایک تھی جب مجلس فروغ اردو ادب دوحہ قطر کے زیر اہتمام عالمی مشاعرہ ہوا اور اسی مشاعرے کے دوران سینکڑوں اردو نوازوں کی موجودگی میں مجلس کے چئیرمین جناب محمد عتیق اور بورڈ کے دیگر ممبران نے پاکستان اور بھارت سے اس سال کا ایوارڈ جیتنے والے دونوں فکشن نگاروں کی خدمت میں طلائی ٹرافی اور ڈیڑھ ڈیڑھ لاکھ روپے نقد کی انعامی رقم پیش کی۔

اس سال پاکستان سے ڈاکٹر خورشید رضوی صاحب کی قیادت میں قائم آزاد جیوری نے جناب مرزا اطہر بیگ صاحب کو اور بھارت سے پروفیسر شافع قدوائی کی سربراہی میں قائم آزاد جیوری نے محترمہ ذکیہ مشہدی صاحبہ کو ایوارڈ کے لیے منتخب کیا تھا۔

مہمانوں اور سامعین کے استقبال کے بعد جناب محمد عتیق صاحب کے افتتاحی خطاب سے شروع ہونے والی تقسیم ایوارڈ کی تقریب اور اس کے بعد شروع ہونے والا عالمی مشاعرہ رات دو بجے تک جاری رہا اور سامعین دلجمعی کے ساتھ آخری شاعر تک بیٹھے رہے اور داد وتحسین سے نوازتے رہے۔
مشاعرے کی صدارت عالمی شہرت یافتہ شاعر اور دانشور پروفیسر ڈاکٹر پیرزادہ قاسم نے فرمائی جبکہ نظامت کی ذمہ داری مجلس فروغ اردو ادب کے سکریٹری جنرل عبید طاہر نے بخوبی ادا کی۔

مقامی شعرا میں سانول عباسی ، رضا حسین رضا، سید زوار حسین زائر اور عزیز نبیل نے اپنا کلام دلپذیر سُنایا جبکہ مہمان شعرا میں بھارت سے سالم سلیم ، عزم شاکری ، شارق کیفی اور شبینہ ادیب ، جبکہ پاکستان سے افضل خان ، ڈاکٹر انعام الحق جاوید اور میرِ مشاعرہ ڈاکٹر پیرزادہ قاسم رضآ صدیقی نے اپنا شاندار اور منتخب کلام پیش کیا۔ اردو کے چاہنے والوں کی بڑی تعداد سے ڈی پی ایس اسکول کا وسیع آڈیٹوریم جگمگا رہا تھا اور ان کی مسلسل داد سے فضاؤں میں اردو کی خوشبو پھیل رہی تھی۔
مجلس کے تمام اراکین اور ذمہ داروں کی انتھک محنت ہر قدم پر صاف محسوس کی جاسکتی تھی۔ حامد رسول صاحب ، جاوید ہمایوں صاحب، صدر انتظامیہ کمیٹی قمرالزمان بھٹی صاحب ، نواز اکرم صاحب ، زاہد شریف صاحب ، محمد وسیم صاحب ، فرزانہ صفدر صاحبہ، عائشہ مجاہد صاحبہ، جاوید بھٹی صاحب ، سانول عباسی صاحب ، رضا حسین صاحب ، ولید قمر صاحب ، انور علی رانا صاحب اور دیگر تمام احباب اور رضاکاروں کا بہت شکریہ جنہوں نے ان دو روزہ تقریبات کو کامیاب بنانے میں اہم کردار ادا کیا۔
مجلس ؛ قطر کی وزارتِ ثقافت اور وزارت داخلہ کی ممنون ہے جنہوں نے بھرپور تعاون کیا اور ضروری اجازت نامے فراہم کیے۔ اسی طرح مجلس فروغ اردو ادب اپنے تمام اسپانسرز کی دل سے شکرگذار ہے جن کے مالی تعاون سے ایوارڈ کی تقریب اور عالمی مشاعرے کا انعقاد ممکن ہوسکا۔
مجلس ؛ دوحہ کی سبھی ادبی و سماجی تنظیموں کا بھی شکریہ ادا کرتی ہے جن کے ذمہ داران اور اراکین نے مشاعرے کی رونق میں اضافہ کیا۔
ان شااللہ آئندہ برس مجلس ایک بار پھر اسی طرح کے ادبی جشن کے ساتھ دوبارہ حاضر ہوگی۔

عبید طاہر
سکریٹری جنرل
مجلس فروغ اردو ادب
دوحہ قطر
چار نومبر ۲۰۲۳


Print Friendly, PDF & Email
Author: ایڈیٹر

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے